44

لگاتار 13 روز تک سونے والی انڈونیشین لڑکی

آپ نے آج تک نیند کے شیدائی کئی لوگ دیکھے ہوں گے لیکن آج ہم جس سے متعلق گفتگو کرنے جارہے ہیں وہ انڈونیشیا سے تعلق رکھنے والی 17 سالہ ایک ایسی لڑکی ہے جو ایک دو نہیں بلکہ 13 دن لگاتار سوتی ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق اس لڑکی کو رئیل لائف سلیپنگ بیوٹی اور انڈونیشیا کے صوبے ساؤتھ کالی مانتن کی بیٹی کہا جاتا ہے۔ایکا انڈونیشیا کے جنوبی صوبے کالی مانتن سے تعلق رکھتی ہیں ، ایکا 2017 میں اس وقت خبروں کی زینت بنیں جب وہ 13 دن تک لگاتار سوتی رہیں۔اس کے بعد بھی ایکا نے دو مشکل ترین تجربات کا سامنا کیا پہلی بار تب، جب ایکا ڈیڑھ دن سوتی رہیں اور دوسری مرتبہ ایکا کی حالت اس وقت خاصی خراب ہوگئی جب وہ 7 دن سوتی رہیں جس کے بعد ان کے والدین ایکا کو مقامی اسپتال لے کر گئے جہاں ان کے تمام ٹیسٹ نارمل نکلے۔
ایکا بلآخر 9 دن بعد جاگ گئی لیکن ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ ایکا اب بھی کمزور ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق کوئی فی الحال یہ نہیں جان سکا ہے کہ ایکا کس بیماری میں مبتلا ہیں لیکن علامات سے پتا چلتا ہے کہ وہ ہائپر سومنیا میں مبتلا ہیں۔ہائپر سومنیا ایک ایسی بیماری ہیں جس میں مبتلا مریض کو دن میں ضرورت سے زیادہ نیند آتی ہے یا وہ نیند میں زیادہ وقت ضائع ہوتا ہے۔طبی ماہرین کے مطابق ہائپر سومنیا کے شکار افراد کسی بھی وقت سوسکتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں