30

فریال تالپور نااہلی کیس، عدالت نے الیکشن کمیشن کو سماعت سے روک دیا

فریال تالپور کی الیکشن کمیشن میں نااہلی سے متعلق جاری کیس کی سماعت اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ کی سربراہی میں ہوئی۔فریال تالپور کے وکیل فاروق نائیک کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن نے نااہلی کیس کی بحالی کی درخواست پر ہمیں سنا ہی نہیں، الیکشن کمیشن میں ہمیں سنے بغیر نااہلی کیس بحال کیا گیا۔فریال تالپور کے وکیل کی جانب سے اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ پی ٹی آئی کے اراکین سندھ اسمبلی ارسلان تاج اور رابعہ افضل نے فریال تالپورکی نااہلی کی درخواست دائر کر رکھی ہے، ایم پی اے ارسلان تاج اور رابعہ افضل کی درخواست پر الیکشن کمیشن نے نااہلی کیس کھول دیا۔
درخواست میں کہا گیا ہے کہ دونوں ایم پی ایز کی عدم پیری پر خود الیکشن کمیشن بھی پہلے درخواست خارج کر چکا تھا، 8 فروری کو دوبارہ درخواست آنے پر الیکشن کمیشن نے کیس دوبارہ کھول دیا۔فریال تالپور کی جانب سے دائر درخواست میں الیکشن کمیشن کا 8 فروری کا فیصلہ کالعدم قرار دیکر الیکشن کمیشن کو کارروائی سے روکنے کی استدعا کی گئی تھی۔چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے کیس میں حکم امتناع جاری کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کو فریال تالپور کی نااہلی سے متعلق کیس کی سماعت سے روک دیا۔عدالت نے الیکشن کمیشن اور دیگر فریقین سے جواب طلب کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 28 مئی تک ملتوی کر دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں