24

نواز شریف کی جائیدادوں کی نیلامی کیخلاف درخواستیں دائر

مسلم لیگ نون کے قائد اور سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کی جائیدادوں کی نیلامی کیخلاف اسلام آبادہائیکورٹ میں درخواستیں دائر کردی گئیں۔
میاں اقبال برکت، اسلم عزیز اور محمد اشرف کی جانب سے دائر کی گئی درخواستوں میں جج احتساب عدالت، ڈپٹی کمشنر لاہور و شیخوپورہ، نیب کے ڈپٹی ڈائریکٹر و تفتیشی افسر کو فریق بنایا گیا ہے۔
دائر درخواستوں میں استدعا کی گئی ہے کہ متعلقہ حکام کو نیلامی سے روکنے کا حکم دیا جائے۔
ایک درخواست میں کہا گیا ہے کہ اپر مال لاہور کا مکان اتفاق گروپ کا اثاثہ ہے، میاں شریف، میاں شفیع، میاں معراج الدین اور دیگر فیملیز کی مشترکہ ملکیت ہے۔
میاں برکت کی درخواست میں کہا گیا ہے کہ نوازشریف کی شیخوپورہ کی جائیدادیں20 مئی کو نیلام کرنے کی تاریخ مقرر کردی گئی ہے۔
محمد اشرف کی درخواست میں کہا گیا ہے کہ شیخوپورہ کی 88 کنال اراضی نوازشریف سے خرید چکا ہوں، نواز شریف کو بذریعہ چیک 7 کروڑ 75 لاکھ کی ادائیگی بھی کی جاچکی ہے۔
درخواست میں بتایا گیا کہ نوازشریف کی گرفتاری کے باعث فروخت کے معاہدے پر عملدر آمد نہ ہوسکا، سیل ڈیڈ پر عملدر آمد کیلئے سول کورٹ سے رجوع کر رکھا ہے۔
اسلم عزیز کی درخواست میں کہا گیا ہے کہ ڈی سی لاہور 105 ایکڑ اراضی نیلام کرنے کیلئے قبضہ میں لے رہے ہیں،زمینیں پٹے پر لے کر پھلوں کے باغ لگانے کے لئے بھاری سرمایہ کاری کی ہے۔
ان کا کہنا ہے کہ میرا گزر بسر اسی پر ہے، نیلامی سے سرمایہ کاری ضائع ہونے کا خدشہ ہے، ڈی سی لاہور کو زمین کی نیلامی سے روکا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں